توڑ ڈالیں قلم تو بہتر ہے

اُردُو نِگار
توڑ ڈالیں قلم تو بہتر ہے
نہ لکھیں رازِ غم تو بہتر ہے

یوں بھی ہم کو نہ چھوڑے گی دنیا
آپ کر لیں ستم تو بہتر ہے

کفر ہے ہم اگر تمھیں چاہیں
لوگ پوجیں صنم تو بہتر ہے

عشق مرتا تو کم ہی ہے لیکن
عشق مارے بھی کم تو بہتر ہے

داد ملتی ہے وہ سنیں نہ سنیں
آہ کا زیر و بم تو بہتر ہے

نہ کرو توبہ دل دکھانے سے
اب نہ ٹوٹے قسم تو بہتر ہے

دل کا قصہ وہی قدیمی ہے
نہ سنیں محترم! تو بہتر ہے

منزلیں اب بھی دور ہیں راحیلؔ
اب تو مر جائیں ہم تو بہتر ہے

راحیلؔ فاروق

۱۸ ستمبر ۲۰۱۴ء​

راحیلؔ فاروق

اُردُو نِگار

ہیچ نہ معلوم شد آہ کہ من کیستم... میرے بارے میں مزید جاننے کے لیے استخارہ فرمائیں۔ اگر کوئی نئی بات معلوم ہو تو مجھے مطلع کرنے سے قبل اپنے طور پر تصدیق ضرور کر لیں!

0 آراء :

ایک تبصرہ شائع کریں