اعلان

اُردُو نِگار
میں ہار گیا۔
ایک ناکام، نامراد شخص جس کے پاس کھوکھلی باتوں کے سوا کچھ بھی نہیں۔ کنکروں، پتھروں، کوئلوں اور ہیروں سے بنی ہوئی دنیا میں باتیں گونجنے کے سوا کیا کر سکتی ہیں؟
میری باتیں گونجتی رہیں گی۔ جتنی بار گونجیں گی اتنے پتھر مجھے کھینچ کھینچ کر مارے جائیں گے۔ اتنی بار یاد دلایا جائے گا کہ دنیا دل سے بہت چھوٹی ہے۔ دنیا میں محبت، ایمان، اخلاص جیسی چیزیں پوری نہیں آتیں۔ دل میں ان کی جگہ ہو سکتی ہے، لیکن دل تب تک دھڑکتا ہے جب تک پیٹ میں روٹی ہو۔
لوگ مجھے احمق کہتے ہیں۔ میں تسلیم کرتا ہوں۔ میں پیسا نہیں کما سکتا۔ میرے باپ دادا بھی پیسا نہیں کما سکتے تھے۔ وہ غیرت کو روٹی پر ترجیح دیتے تھے۔ وہ بھوکے مرے۔ میں بھی بھوکا مر جاؤں گا۔ آج نہیں تو کل۔
مجھے لوگوں سے کوئی شکوہ نہیں۔ لوگ سمجھ دار ہیں۔ اپنے اور اپنے بال بچوں کے مستقبل کا سوچتے ہیں۔ اس لیے انھیں روٹی کمانا ضرور سکھاتے ہیں۔ اسی لیے جیتے رہتے ہیں۔ ان سے حسد نہیں کیا جا سکتا۔ میرا ان کا کوئی مقابلہ نہیں۔ میں ایک اور ہی دنیا کا باسی ہوں۔ اس دنیا میں کتنے دن رہوں گا؟ اپنی دنیا کو لوٹ جاؤں گا۔ آج نہیں تو کل۔
لیکن میری یہ درخواست ضرور ہو گی کہ سمجھ دار لوگوں کو مجھ جیسی کھوکھلی باتیں نہیں کرنی چاہئیں۔ آپ کا دنیا میں مقصد روٹی کمانا ہے۔ آپ کے منہ سے دین، ایمان، محبت، اخلاص کی باتیں اچھی نہیں لگتیں۔ سب جانتے ہیں۔ آپ بھی جانتے ہیں۔ یہ باتیں مجھ جیسے پاگلوں کو جچتی ہیں۔ ہم ہی کو کرنے دیجیے۔
شاید آپ سوچیں۔ کہاں راحیلؔ؟ کیسا دین؟ کیا ایمان؟ کون سی محبت؟ کہاں کا اخلاص؟ تو میں یہی کہوں گا کہ آپ ایسا نہ سوچیے۔ یہ آپ کا میدان نہیں۔ آپ روٹی کمائیے۔ یہ کام ہم پاگلوں کا ہے۔ ہم ہی کو کرنے دیجیے۔

راحیلؔ فاروق

اُردُو نِگار

ہیچ نہ معلوم شد آہ کہ من کیستم... میرے بارے میں مزید جاننے کے لیے استخارہ فرمائیں۔ اگر کوئی نئی بات معلوم ہو تو مجھے مطلع کرنے سے قبل اپنے طور پر تصدیق ضرور کر لیں!

0 آراء :

ایک تبصرہ شائع کریں