غزل - حسن والوں کے نام ہو جائیں

اُردُو نِگار
اردو غزل - راحیلؔ فاروق - Urdu Ghazal - Urdu Poetry - Urdu Shairi

غزل کا متن:

حسن والوں کے نام ہو جائیں
ہم خود اپنا پیام ہو جائیں

چار ہونے پہ ان کی آنکھوں نے
طے کیا، ہم کلام ہو جائیں

حد تو یہ ہے کہ ان کے چلوے بھی
احتراماً حرام ہو جائیں

خاص لوگوں کے خاص ہونے کی
انتہا ہے کہ عام ہو جائیں

اس کی محنت حلال ہو جائے
جس کی نیندیں حرام ہو جائیں

ان کو سجدے تو کیا کریں راحیلؔ
تذکرے صبح و شام ہو جائیں

راحیلؔ فاروق

۱۸ ستمبر ۲۰۱۴ء

راحیلؔ فاروق

اُردُو نِگار

ہیچ نہ معلوم شد آہ کہ من کیستم... میرے بارے میں مزید جاننے کے لیے استخارہ فرمائیں۔ اگر کوئی نئی بات معلوم ہو تو مجھے مطلع کرنے سے قبل اپنے طور پر تصدیق ضرور کر لیں!

1 تبصرہ :