مرا دل

ایک تم ہو کہ تمھارے ہیں پرائے دل بھی—
ایک میں ہوں کہ مرا دل مرے قابو میں نہیں
– فانیؔ بدایونی

تبصرہ کیجیے